قاضی احمد ((نامہ نگار اشفاق احمد راجپوت))

قاضی احمد پولیس اسٹیشن کے ایس ایچ او محمد حسین کھرل نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے دعوہ کیا کہ 23-08-2019 کو گشت کے دوران قاضی احمد پولیس نے اسنیپ چیکنگ کے دوران نواب شاھ سے آنے والی موٹر سائیکل کو رکنے کا اشارہ کیا مگر موٹر سائیکل سواروں نے پولیس پر فائرنگ شروع کردی جبکہ پولیس نے جوابی فائرنگ کی اور تقریباً 5منٹ دو طرفہ فائرنگ جاری رہی جس کے نتیجے میں پولیس نے دھنی بخش کوری عرف وڈل کوری،رضا محمد چانڈیو ولد مرزہ چانڈیو، حضور بخش ولد راحب الدین ڈاھری گائوں سونو خان بھٹی سے 1عدد موٹر سائیکل 2عدد 30 بور پسٹل اور نقدی برآمد کرتے ہوئے گرفتار کر لیا گیا ایس ایچ او قاضی احمد کا کہنا تھا کہ یہ قاضی احمد پولیس کی بڑی کامیابی ہے اور 3ماہ قبل زین بیوریج سے 696000 کی واردات ہوئی تھی اس واردات میں بھی یہی گروہ شامل تھا یہ گروہ اندرون سندھ میں کئی وارداتوں میں شامل ہے اس گروہ میں اور بھی بہت سےلوگ شامل ہیں جو چوری،ڈاکے اغواہ اور مختلف وارداتوں میں شامل ہیں اس گروہ کا سرغنہ شھزادو عرف شیشی انڑ ہے جو کہ اس وقت جیل میں ہے