5 بچوں کو نہر میں پھیکنے والے سنگدل باپ نے اعترافی بیان میں کیا انکشاف کیا؟

چونیاں: اپنے 5 بچوں کو نہر میں پھینکنے والے سنگدل باپ کا کہنا ہے کہ مجھ سے بڑا ظلم ہو گیا، بچوں کی یاد ستاتی ہے۔

پانچ بچوں کو نہر میں پھینکنے والے سنگدل باپ نے پولیس کو اپنے اعترافی بیان میں بتایا کہ دھکا دیتے وقت بچوں نے شور نہیں کیا، اگر وہ شور کرتے تو شاید مجھے ان پر ترس آ جاتا۔

ملزم نے بتایا کہ بیوی سے تلخ کلامی اور جھگڑے پر طیش میں آ گیا تھا، رشتہ داروں کے طعنوں نے یہ کام کرنے پر مجبور کیا، بچوں کی یاد ستاتی ہے، مجھ سے بڑا ظلم ہوا۔

دوسری جانب نہر میں تین بچوں کی تلاش تیسرے روز بھی جاری ہے۔

ڈسٹرکٹ ایمرجنسی آفیسر کا کہنا ہے کہ 2 بچوں کی لاشیں کل نکال لی گئی تھیں، باقی تین بچوں کی تلاش کے لیے 2 کشتیاں، 20 ریسکیو اہلکار اور غوطہ خور امدادی کارروائیوں میں مصروف ہیں، بچوں کے ملنےتک آپریشن جاری رہےگا۔

خیال رہے کہ تین روز قبل سنگدل باپ نے اپنے 5 بچوں کو نہر میں پھینک دیا تھا۔