پہاڑی علاقوں میں فوری طبی امداد فراہم کرنے کیلئے جیٹ سوٹ سروس کا تجربہ

پہاڑی علاقوں میں اسپتال اور ایمرجنسی کی صورت میں ایمبولینس کو فوری پہنچنے میں دشواری کا سامنا ہوتا ہے اور اسی مسئلے کو مدِ نظر رکھتے ہوئے برطانیہ میں دنیا کی پہلے جیٹ سوٹ پیرامیڈک سروس کا تجربہ کیا گیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق برطانیہ کے پہاڑی لیک ضلع میں حال ہی میں دنیا کی پہلی جیٹ سوٹ پیرامیڈکس سروس کا تجربہ کیا گیا ہے۔

جیٹ سوٹ سروس بنانے والی کمپنی گریویٹی انڈسٹریز کا کہنا ہے کہ یہ 1050 بریک ہورس پاور سسٹم اور 5 ٹربائنز کے تحت فضاء میں پرواز کرتا ہے۔

کمپنی نے بتایا کہ یہ جیٹ سوٹ 5 سے 10 منٹ تک زیادہ سے زیادہ 85 میٹر فی گھنٹے کی رفتار سے اڑان بھرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

برطانیہ میں اس سروس کا تجربہ کرنے والی ٹیم کا یہ ماننا ہے کہ یہ جیٹ سوٹ پیرامیڈکس سروس پہاڑی علاقوں کے لیے ایک بڑی تبدیلی سمجھی جا رہی ہے۔

جیٹ سوٹ پیرامیڈک سروس کا تجربہ کرنے والی ٹیم نے بتایا ہے کہ جہاں انہیں پیدل پہنچنے میں 25 منٹ کا وقت لگتا ہے، اس سروس کے ذریعے وہ یہ فاصلہ 90 سیکنڈز میں طے کر سکتے ہیں۔

یہ فلائنگ ایمرجنسی رسپانڈر مریض کے پہنچتے ہی اس کی حالت کی جانچ کرنے کے بعد یہ فیصلہ کرے گا کہ آیا اسے ائیر لفٹ کے ذریعے اسپتال منتقل کرنے کی ضرورت ہے یا نہیں۔