پنجاب حکومت پی ڈی ایم کو جلسے کی اجازت نہ دینے کے فیصلے پر ڈٹ گئی

پنجاب حکومت پاکستان ڈیموکریٹک مومنٹ (پی ڈی ایم) کو مینار پاکستان پر جلسے کی اجازت نہ دینے کے فیصلے پر ڈٹ گئی ہے۔

ذرائع پنجاب حکومت کے مطابق صوبے میں 300 سے زائد افراد کے اجتماع پر پابندی ہے، محکمہ پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کے نوٹیفکیشن کے بعد مزید نوٹیفکیشن کی ضرورت نہیں ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پنجاب میں کورونا کیسز کی شرح چار اور لاہور میں 8 فیصد ہو گئی ہے جبکہ لاہور میں دہشتگردی کے ممکنہ خدشے کے باعث ہائی الرٹ بھی جاری کر دیا گیا ہے۔

ذرائع پنجاب حکومت کے مطابق جب کورونا پھیل رہا ہو اور دہشت گردی کا خدشہ ہو تو جلسے کی اجازت دینا ممکن نہیں ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ عوام خود کو کورونا سے بچانے کے لیے اجتماعات میں نہ جائیں۔

خیال رہے کہ پی ڈی ایم نے 13 دسمبر کو مینار پاکستان سے متصل گراؤنڈ پر جلسے کا اعلان کر رکھا ہے۔

پنجاب حکومت کی جانب سے پی ڈی ایم کو جلسے کی اجازت نہیں دی گئی ہے جبکہ وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ ہم اپوزیشن کو نہ جلسے کی اجازت دیں گے اور نہ ہی انہیں جلسے سے روکیں گے۔