WordPress database error: [Table 'db821282199.YhPGeuvMupviews' doesn't exist]
SELECT * FROM YhPGeuvMupviews WHERE user_ip = '3.236.122.9' AND post_id = '5715'

WordPress database error: [Table 'db821282199.YhPGeuvMupviews' doesn't exist]
SHOW FULL COLUMNS FROM `YhPGeuvMupviews`

میرپورخاص

میرپورخاص : 78 موری ، جھلوری ، ڈینگان ، 12 میل کی سیکڑوں علاقہ مکین منشیات فروشوں اور ان کی سرپرستی کرنے والوں کے خلاف روڈوں پر نکل آئے احتجاج ، دھرنا مین عمرکوٹ روڈ بلاک ۔

میرپورخاص ( شاہزیب خاصخیلی ) ضلع میرپورخاص کے علاقوں 78 موری ، جھلوری ، ڈینگان ، 12 میل پر فروخت ہونے والی منشیات کے خلاف بڑی تعداد میں علاقہ مکین روڈوں پر نکل آئے ۔ 78 موری کے مین عمرکوٹ روڈ پر گٹکے کی تھیلیوں اور دیگر منشیات کو آگ لگا کر احتجاج ، دھرنا روڈ بلاک ۔ تفصیلات کے مطابق ضلع میرپورخاص کے علاقوں 78 موری ، جھلوری ، ڈینگان ، 12 میل پر بکنے والی جان لیوا منشیات گٹکا ، سفینہ مین پوڑی کے خلاف علاقے کے بڑی تعداد میں شہریوں نے احتجاج کرتے ہوئے 78 موری مین عمرکوٹ روڈ بلاک کر کے دھرنا دیا علاقے کے معززین الاھی بخش مہر ، شاہنواز نوھڑی ، رضا محمد مہر ، جمیل شر ، زوہیب شر کی رہنمائی میں ہونے والے احتجاج کے دوران بڑی تعداد میں شہریوں نے گٹکے ، سفینہ اور دیگر منشیات کو روڈ پر آگ لگا کر منشیات فروشوں کے خلاف سخت نعرہ بازی کی احتجاج کے دوران مظاہرین نے گٹکا ، سفینہ اور دیگر منشیات کی تھیلیوں کو آگ لگا کر دھرنا دیا مظاہرین کی رہنمائی کرنے والے علاقے معززین الاھی بخش مہر ، شاہنواز نوھڑی ، رضا محمد مہر ، جمیل شر ، زوہیب شر نے بتایا کہ ہمارے علاقے 78 موری ، جھلوری ، ڈینگان ، 12 میل سمیت اردگرد کے دیہات منشیات کا گڑھ بن گئے ہیں منشات فروشوں علی گوھر ، امجد ، ارشد ، قاسم اور ان کی سرپرستی کرنے والوں جس کی وجہ سے ہماری آنے والی نوجوان نسل تباہ ہو رہی ہے یہاں تک کہ اسکول میں پڑھنے والے بچے تک بھی اس خطرناک منشیات کا استعمال کر رہے ہیں بار بار احتجاج کرنے کے باوجود کوئی بھی دھیان دینے کے لیے تیار نہیں ہے جس کی وجہ سے آخر کار ہم مجبور ہوکے روڈوں پہ نکلے ہیں ۔ انہوں نے SSP میرپورخاص پولیس فیصل بشیر میمن ، DIG پولیس میرپورخاص ذوالفقار مہر اور IG سندھ پولیس سے مطالبہ کیا کہ خدارا ان منشیات فروش اور ان کی سرپرستی کرنے والوں کے خلاف سخت قانونی کارروائی کر کے علاقے کو منشیات سے پاک کیا جائے ۔ انہوں نے خبردار کرتے ہوئے کہا کے اگر پولیس نے منشیات پر کنٹرول نہیں کیا تو مجبورا ہمیں ایڈیشنل IG حیدرآباد کی آفیس کے آگے احتجاج اور دھرنا دیں گے جس کی تمام تر ذمہ داری انتظامیہ پر ہوگی ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں