سینیٹ سکیورٹی انچارج کو کل بغیر اشتہار کے تعینات کیا گیا

سینیٹ کے سکیورٹی انچارج وجاہت افضل کا کہنا ہے کہ پولنگ بوتھ سے خفیہ کیمرہ نکلنے کے واقعے کی سی سی ٹی وی فوٹیج کو ضائع نہیں ہونے دوں گا۔

جیو نیوز نے سینیٹ کے سکیورٹی انچارج کی تعیناتی کا نوٹیفکیشن حاصل کر لیا ہے جس کے مطابق ایوان بالا کے سکیورٹی انچارج وجاہت افضل کو 11 مارچ کو ہی تعینات کیا گیا ہے۔

اعلامیے کے مطابق وجاہت افضل کو ایک سال کے لیے سارجنٹ ایٹ آرمز تعینات کیا گیا، وجاہت افضل کو بغیر اشتہار کے رول 17 کے تحت تعینات کیا گیا اور ان کی تعیناتی 9 مارچ سے کی گئی ہے۔

سیکشن افسر ظہور احمد کی جانب سے وجاہت افضل کی سینیٹ سیکرٹریٹ میں گریڈ 18 میں تعیناتی کا نوٹیفکیشن جاری کیا گیا۔

مصطفیٰ نواز اور مصدق ملک کی سینیٹ سکیورٹی انچارج سے ملاقات

سینیٹر مصطفیٰ نواز کھوکھر اور مصدق ملک نے سینیٹ کے سکیورٹی انچارج وجاہت افضل سے ملاقات کی جس میں انہوں نے سینیٹ کی سکیورٹی کے حوالے سے پوچھا۔

سکیورٹی انچارج وجاہت افضل نے اپوزیشن رہنماؤں کو بتایا کہ ابھی تک کسی نے سینیٹ کی سی سی ٹی وی ویڈیو تک رسائی حاصل نہیں کی۔

مصطفیٰ نواز کھوکھر نے سینیٹ کے سکیورٹی انچارج سے پوچھا کہ کیا ایوان بالا کی سی سی ٹی وی فوٹیج ابھی تک محفوظ ہے؟ جس پر جواب دیا کہ جی سی سی ٹی وی ویڈیو ابھی تک محفوظ ہے۔

مصطفیٰ نواز کھوکھر نے سکیورٹی انچارج سے کہا کہ آپ کی ذمہ داری ہے کہ سی سی ٹی وی فوٹیج کو ضائع نہ ہونے دیں، جس پر وجاہت افضل نے کہا کہ ہمارے پاس جو بھی ویڈیو ہے وہ محفوظ ہے، میں سی سی ٹی وی ویڈیو کو ضائع نہیں ہونے دوں گا۔

خیال رہے کہ سینیٹ میں چیئرمین اور ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کے لیے آج ہونے والی ووٹنگ سے قبل اپوزیشن رہنماؤں نے پولنگ بوتھ کے اندر سے خفیہ کیمرے اور ڈیوائس پکڑی جس کے بعد اپوزیشن کی جانب سے ایوان میں شدید احتجاج بھی کیا گیا۔