رپورٽ علي حيدر چانڊيو

قاضی احمد انصاف کی پکار

قاضی احمد کے نواحی گاوں سوائی راھو کے مقامی زمیندار شاہد راھو کی اپنے بیٹے حماد راھواور فنکشنل لیگی رھنماء سید آصف علی شاہ جیلانی کے ھمراہ پریس کلب قاضی احمد میں پریس کانفرنس کرتے ھوئے کہا کہ جونیجو اور راھو برادری کے کچھ شر پسند افراد علاقے کی معزز شخصیت سید آصف علی شاہ جیلانی کے خلاف زمین پر قبضہ کی من گھڑت اور جھوٹے الزام لگا کر انکی رتبے کو داغدار کرنے کی کوشش کررھے ہیں جبکہ اسماعیل جونیجو خود ایک قبضہ خور شخص ھے جس نے رات کے اندھیرے میں میری دس ویسہ زرعی زمین پر کلے لگاکر قبضہ کیا ھوا ھے انہوں نے مزید کہاکہ دیھ میر محمد جوٹو میں میری سروے نمبر 323 میں 6ایکڑ36 گھنٹا زرعی زمین ھے جس میں سے میں نے 1997 میں اسماعیل جونیجو کو ایک ایکڑ زمین پیسوں کے عیوض اور پونے چار ویسہ فی سبیل اللہ مفت میں اسے دی تھی اور 9 اکتوبر 2020 کو باقی 5 ایکڑ 32 گھنٹہ سید آصف علی شاہ کو فروخت کی تھی جسکی علاقے کے افراد کو خبر ھے اور زمین کی ماپ کے دوران اسماعیل جونیجو وھاں خود موجود تھا اس وقت اس نے ایسی کوئی بات نہیں کی بعد میں اس نے کچھ شرپسندوں کے اشاروں پر کلے لگا کر زمین پر قبضہ کرلیا ھے جوکہ ایک احسان فروش شخص ھے ایک طرف میری والدہ اسپتال میں زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا ھے تو دوسری طرف ھمارے احسانوں کا بدلہ یہ شخص یوں دے رھا ھے سید آصف علی شاہ جیلانی ایک عزت دار گھرانے کا فرد ھے جسکے خلاف یہ احسان فروش شخص شرپسندوں کے اشاروں پر ریلیاں نکال کر آسکی میڈیا ٹرائل کرکے خود مظلوم بنے کی ناکام کوشش کر رھا ھے ھم نے مجبوری کے عالم میں اسسٹنٹ کمشنر قاضی احمد عبدالقدیر گجر کو اسکے خلاف درخواست داخل کرائی ھے کہ وہ خود زمین کا سروے کرکے قبضہ خوروں کے خلاف کاروائی کرکے زمین اصل مالک کے حوالے کرے دوسری صورت میں عدالت کا دروازہ کھٹکھٹائیں گئے اسموقع پر سید آصف علی شاہ جیلانی نے کہاکہ میں نے زمین شاہد راھو سے خرید کی ھے اسماعیل جونیجو جو خود قبضہ خور ھے جو میرے مخالفین کے اشاروں پر میری ساکھ متاثر کرنے کے لئے میری میڈیا ٹرائل کر رھا ھے اور دوسری جانب میری خرید کی ھوئی زمین پر قبضہ کرکے خود مظلوم بنے کی کوشش کر رھا ھے جو کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا